پلاننگ کمیشن نے لواری ٹنل کی تعمیر کی لاگت میں روپے سے زائد کمی کردی 18 ارب

پلاننگ کمیشن نے اربوں روپے کی بڑھی ہوئی لاگت کو مسترد کر دیا ہے۔

لواری روڈ ٹنل اینڈ ایکسس روڈز پراجیکٹ کے لیے 46.04 بلین روپے اور اس کی بجائے اس کی منظوری دی گئی۔ 27.960 بلین روپے جبکہ اسپانسر سے کہا کہ وہ پراجیکٹ کے باقی کاموں کے لیے علیحدہ PC-1 جمع کرائیں۔ PC-1 کسی بھی منصوبے کے پلاننگ کمیشن کی طرف سے حتمی فزیبلٹی ورک دستاویز ہے۔سنٹرل ڈویلپمنٹ ورکنگ پارٹی (CDWP) نے اس منصوبے کو دو مرحلوں میں تقسیم کرنے کا حکم دیا تھا اور 2000000 روپے کی منظوری دی تھی۔ پہلے مرحلے کے لیے 27,960 ارب روپے، جو کہ تقریباً روپے ہے۔ ایک سرکاری ذریعے نے پروپاکستانی کو بتایا کہ کل منصوبے کی نظرثانی شدہ تخمینہ لاگت سے 18 بلین یا 40 فیصد کم ہے، اور کمیونیکیشن ڈویژن/این ایچ اے کو بیلنس کام کے لیے علیحدہ PC-I لانے کی ہدایت کی ہے۔

پنجاب حکومت عمران خان کے لانگ مارچ کا حصہ نہیں بنے گی، وزیر داخلہ پنجاب

Shakira could face 8 years in jail

پاکستان میں صحت عامہ کی صورتحال تباہی کے دہانے پر ہے، عالمی ادارہ صحت

اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.