ٹائٹینک کی مقبول گھڑی نیلامی میں 98 ہزار پاؤنڈز میں فروخت

ٹائٹینک کے غرق ہونے کے 110 سال بعد اس سے ملنے والی ایک پوسٹل کلرک کی پاکٹ واچ 98 ہزار پاؤنڈز میں فروخت کی گئی ہے۔

جب 14 اپریل 1912 کو بحر اوقیانوس میں بحری جہاز ٹائٹینک غرق ہوا تو آسکر سکاٹ ووڈی کی یہ گھڑی پانی میں جا کر جم گئی تھی۔
سمندر سے برآمد کرنے کے ایک ماہ بعد اسے ان کی اہلیہ لیلیٰ کو لوٹا دیا گیا۔
تمام جدید سہولتوں سے آراستہ برطانوی مسافر بردار بحری جہاز ٹائٹینِک 1912 میں بحرِ اوقیانوس میں برف کے تودے سے ٹکرانے کے بعد غرق ہوا تھا اور اس پر سوار سینکڑوں افراد جہاز پر سے ٹھنڈے برفیلے پانی میں ڈوب گئے تھے۔ قریب 700 مسافروں کو بچا لیا گیا تھا۔
سنیچر کو یہ گھڑی ڈیوائزس شہر کے نیلام گھر ہنری الڈریج اینڈ سنز کی جانب سے فروخت کی گئی۔ یہاں اس بدنصیب جہاز سے جڑی دیگر اشیا کی بھی نیلامی ہوئی۔
جیسے جہاز کے فرسٹ کلاس کا مینیو جس پر ’پلور آن ٹوسٹ‘ لکھا تھا، پچاس ہزار پاؤنڈ میں فروخت ہوا۔ فرسٹ کلاس مسافروں کی فہرست 41 ہزار پاؤنڈز میں نیلام کی گئی۔
مسافروں کی یہ فہرست گیمبلر جارج بریرٹن کی ملکیت تھی جو اس جہاز پر محض پیسے کمانے کے لیے سوار ہوئے تھے۔

پنجاب حکومت عمران خان کے لانگ مارچ کا حصہ نہیں بنے گی، وزیر داخلہ پنجاب

Shakira could face 8 years in jail

پاکستان میں صحت عامہ کی صورتحال تباہی کے دہانے پر ہے، عالمی ادارہ صحت

اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.